A life of Pak army soldier in the world's highest battle field "Siachen" Urdu/Hindi documentary

author Shan E Pakistan   3 нед. назад
48 views

11 Like   0 Dislike

Watch-Pakistan army vs Indian army in Siachen Glacier | Life in World's highest battleground Siachen

Pakistan army vs Indian army in Siachen Glacier. Life in World's highest battleground Siachen. Siachen glacier is located in the disputed Kashmir region and is claimed by India and Pakistan. In spite of the severe climate, the word `Siachen` ironically means `the place of wild roses. The glacier is also the highest battleground on Earth, where India and Pakistan have fought intermittently since 1984. Thousand of Indian and Pakistani souldier have been killed due to weather conditions of siachen glacier .Both countries maintain permanent military personnel on the glacier at a height of over 7,000 metres. The site is a prime example of mountain warfare. The Siachen glacier`s melting waters are the main source of the Nubra River, which falls into the Shyok River. The Shyok in turn joins the Indus River, crucial to both India and Pakistan.Siachen Glacier now called the killed Glacier and killer mountain in the world. Please if you like our video ,subscribe our channel for more videos,thanks. -~-~~-~~~-~~-~- Please watch: "Amazing view of Chattar Muzaffarabad Aazad Kashmir from Lohar Gali" https://www.youtube.com/watch?v=j9hCrlB8iA0 -~-~~-~~~-~~-~-

پاک فوج انسان ہیں یا جن؟ بھارتی میڈیا رو پڑا

یہ دراصل رنڈین میڈیا ایک سازش کے تحت پاک فوج کے خلاف جھوٹا پراپوگینڈا کررہا ہے جونہ صرف مضحکہ خیز بلکہ نہایت بھونڈا ہے۔

pakistan army living at siachen glacier || siachen life || life at siachen glacier || info teacher

please watch and subscribe my channel for more videos. you will get more news of pakistan in urdu language. naseehat amoz kahaniyan aur audio kahaniyan b sun ske gy.. hamara channel subscribe kre aur videos ko like aur share b zror kren ta k zyada se zyada log dekh ske.. Disclaimer- Some contents are used for educational purpose under fair use. Copyright Disclaimer Under Section 107 of the Copyright Act 1976, allowance is made for "fair use" for purposes such as criticism, comment, news reporting, teaching, scholarship, and research. Fair use is a use permitted by copyright statute that might otherwise be infringing. Non-profit, educational or personal use tips the balance in favor of fair use. I am not owner of any content which i used in my video all resource like picture or video from google or any other helpful site which help us to explain our video nicely or deeply so i credit to my all work to google or any other sites . if i used any other's content then i will definitely credit to him thanks i hope all owner understand to me if i used some content in my videos thanks again to all owners. ap hme facebook pe b join kr skte hain www.facebook.com/TheInfoTeacher ap hme twitter pe b join kr skte hain www.twitter.com/TheInfoTeacher ap hme youtube pe b join kr skte hain www.youtube.com/TheInfoTeacher ++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++ CREATED PLAYLISTS Biography and life stories of famoous personalities https://www.youtube.com/watch?v=_8lRMzHGQrM&list=PLEOZLU8qmXaZQGFxlB7dpPQMg4koYeUsL ++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++++ fakhar zaman life story in urdu fakhar zaman biography in urdu https://youtu.be/3RkgZs2_JHY Virat kohli life story Virat kohli biography in urdu hindi https://youtu.be/aurzaZppAr4 ahmed shehzad life story ahmed shehzad biography https://youtu.be/-tdddury2fc shahid afridi life story - biography of boom boom afridi https://youtu.be/kYXBQG4pDY0 imran nazir life story and why he is not in pakistan cricket team https://youtu.be/7YPOzFrkCuI CHRIS GAYLE LIFE STORY IN HINDI CHRIS GAYLE BIOGRAPHY https://youtu.be/_8lRMzHGQrM general raheeel sharif life story general raheel Sharif biography https://youtu.be/gGC4eOIwGDU history of cigarette- Cigarette Racing Documentary https://youtu.be/GnFlCszW1J0 history of silent films in hindi urdu https://youtu.be/XmDeOnJXbFI Dolay shah key chohay full docoumentry https://youtu.be/4Z_5852E3ro imam hussain aur waqiya karbala in urdu hindi https://youtu.be/iWh7t02_h2A TOP 5 Cricketer who never bowled a no ball in cricket history https://youtu.be/Xrpsxiyna4A

پاک آرمی ٹینک کا حیرت انگیز کارنامہ

The Challenge of being a Siachen Warrior | Ata Hasnain | TEDxYouth@MayoCollege

The biggest killer on either side of the battle line is not the enemy! Gen. Hasnain shares his experiences and what it takes to survive the most difficult battle zone on the planet. Lt Gen Syed Ata Hasnain, PVSM, UYSM, AVSM, SM, VSM & BAR, the former Corps Commander of the Indian Army’s Srinagar based 15th Corps is also one of the most higly decorated officers who has experience of almost every turbulent spot where the Indian Army is deployed. He served in Sri Lanka, Punjab (during the militancy), North East India, Jammu & Kashmir and commanded his unit in the Siachen Glacier. He also served the United Nations in Rwanda and Mozambique. In 2010 he was assigned to Kashmir for the seventh time to lead the Army’s efforts to find peace. His achievements, through an innovative approach to sub conventional conflict. His leadership techniques famously titled — ‘Heart is My Weapon”, “Play Friend, Not God” and “Passion in the Heart & Fire in the Belly”, are considered new age mantras for the Army and other organizations. This talk was given at a TEDx event using the TED conference format but independently organized by a local community. Learn more at http://ted.com/tedx

A life of Pak army soldier in the world's highest battle field "Siachen" Urdu/Hindi documentary
سیاچن قراقرم کی برفیلی چوٹیوں پر موجود، تین کھرب مکعب فٹ برف سے بنا ہوا 45 میل لمبا اور تقریباً 20 ہزار فٹ کی بلندی سے شروع ہونے والا برف کا وہ جہان ہے جو قطب شمالی اور قطب جنوبی کو چھوڑ کر دنیا کا دوسرا سب سے بڑا گلیشیئر ہے۔

یہاں پر ڈیوٹی ادا کرنے والے فوجیوں کے لیے روایتی تیاری ناکافی ہوتی ہے۔ اس خطے میں موسم اپنی تمام تر سختیاں اور دشواریاں ساتھ لاتا ہے اور عام طور پر یہاں کا درجہ حرارت منفی دس سے منفی بیس ڈگری رہتا ہے جبکہ اکتوبر سے مارچ تک ناقابلِ یقین منفی 50 ڈگری تک گر جاتا ہے۔

سردی کے موسم میں برفانی طوفان اور ہواؤں کے جھکڑ 200 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چلتے ہیں اور اپنے ساتھ اوسطاً 40 فٹ برفباری لاتے ہیں۔ اس گلیشیئر پر سالانہ آٹھ ماہ برفباری ہوتی ہے اور اونچائی کی وجہ سے صرف 30 فیصد تک آکسیجن رہ جاتی ہے جو کہ وہاں پر کام کرنے والے فوجیوں کے مطابق سب سے کڑا امتحان ہوتا ہے۔





کراچی سے تعلق رکھنے والے ایک میجر جنھوں نے حال ہی میں سیاچن سیکٹر پر سات ماہ گزارے تھے، بی بی سی کو بتایا کہ سانس لینا یعنی وہ چیز جو ہم سب سے آسان سمجھتے ہیں وہی سب سے مشکل کام ہے۔

'شہر میں تو ہم کبھی سوچتے بھی نہیں ہیں کہ اگلی سانس آئے گی یا نہیں لیکن یہاں معاملہ بالکل فرق ہے۔ آپ لمبی سانس لینا کا تصور بھی نہیں کر سکتے۔اور اتنی کم آکسیجن میں آرام کرنا بھی مشکل ہو جاتا ہے۔'

سیاچن 323 بریگیڈ کے نائب کمانڈر کرنل عامر اسلام نے بی بی سی کو بتایا کہ سیاچن پر ڈیوٹی دینے سے پہلے تمام فوجیوں کو مخصوص تیاری سے گزرنا پڑتا ہے جہاں انھیں آرمی کے کوہ پیمائی کے سکول میں تربیت دی جاتی ہے اور سیاچن کی آب وہوا کا عادی ہونے کی تیاری کروائی جاتی ہے۔

'ہماری اصل کوشش ہوتی ہے کہ فوجیوں کو کم آکسیجن میں پوری صلاحیت سے کام کرنے کے قابل بنایا جائے۔'

سیاچن پر ڈیوٹی کرنے والے پاکستانی فوجی اپنے کندھوں پر 25 سے 30 کلو وزنی سامان اٹھا کر ہزاروں فٹ بلندی پر سفر کرتے ہیں۔ اس سامان میں آکسیجن کنستر، برفانی کلہاڑی، خشک کھانا، رسیاں، خاص جرابیں اور دستانے شامل ہوتے ہیں۔ ان فوجیوں کے لیے برف پر چلنے والے مخصوص جوتے ہی صرف دس کلو وزنی ہوتے ہیں۔

سیاچن پر کام کرنے کے لیے فوجیوں کو رفتہ برفتہ اونچی چوکیوں پر بھیجا جاتا ہے۔ کرنل عامر اسلام نے بتایا کہ عام طور پر فوجی ایک چوکی پر 45 دن کام کرتے ہیں جس کے بعد انھیں دوسری چوکی پر بھیج دیا جاتا ہے لیکن سردی کے موسم میں ایسا کرنے کافی دشوار ہوتا ہے کیونکہ برفانی طوفان اور تیز جھکڑ سے جان جانے کا کافی خدشہ ہوتا ہے۔




سیاچن کے محاذ پر وقت گزارنے کے بعد اس بات کا واضح اندازہ ہوتا ہے کہ ایک فوجی جو زندگی سیاچن پر گزارتا ہے اسے وہ تجربہ کسی اور محاذ پر نہیں مل سکتا۔

معمولی کام جیسے دانت برش کرنا، باتھ روم جانا، شیو کرنا، یہ تمام چیزیں 18000 فٹ کی بلندی پر کرنا جان جوکھوں سے کم نہیں ہے۔ منفی 20 ڈگری کی سردی میں جلد پر ٹھنڈے پانی لگنے کا مطلب ہے فراسٹ بائیٹ اور اس کا علاج صرف اس عضو کو کاٹ کر پھینکنا ہے۔

کراچی سے تعلق رکھنے والے میجر نے بی بی سی کو بتایا کہ وہاں پر ایک اور چیلنج کھانے کا ہوتا ہے۔

'ہمیں بس راشن ایک دفعہ ملتا ہے سال میں جسے ہم برف میں سٹور کر لیتے ہیں۔ اور وہ کھانے اگر نہ ہی کھائیں تو بہتر ہے۔'

دوسری جانب کھانا بنانا ایک الگ امتحان ہوتا ہے کیونکہ اتنی اونچائی پر صرف دال گلانے میں اکثر چار سے پانچ گھنٹے لگ جاتے ہیں۔ ان کے مطابق جب وہ اپنی ڈیوٹی مکمل کر کے نیچے آئے تو ان کا وزن 18 کلوگرام کم ہو چکا تھا۔

لیفٹینٹ کرنل نے بی بی سی کو بتایا: 'آپ سیاچن پر دشواری کا اندازہ اس بات سے لگائیں کہ جب ہم اوپر جاتے ہیں تو تربیت میں بولا جاتا ہے کہ کم ہلو اور آکسیجن بچاؤ۔ لیکن دوسری جانب 19000، 20000 فٹ کی بلندی پر آپ ساکت نہیں بیٹھ سکتے کیونکہ اس قدر شدید سردی میں خون جمنے کا خطرہ ہوتا ہے۔ آپ کریں تو کیا کریں؟'

جسمانی بیماریوں کے علاوہ ایک اور مسئلہ ذہنی حالت بھی ہے جس کا تذکرہ کم ہی ہوتا ہے۔

حال ہی میں چھ ماہ بعد سیاچن سے واپس آنے والے سپاہی شکور نے بی بی سی کو بتایا کہ انھیں وہاں سب سے زیادہ تکلیف تنہائی سے ہوئی تھی۔

Comments for video: